مصبر / ایلوا / گھیکوار / aloe vera

مصبر / ایلوا / گھیکوار / aloe vera

مصبر / ایلوا / گھیکوار یا کنوار گندل بوٹی کے پتوں کے رس بنایا جاتا ہے۔ گھیکوار( کنوار گندل) جو ایلواجزیرہ سقوطرہ اور زنجبار سے آتا ہے۔ وہ صبر سقوطری کے نام سے ملتا ہے۔ اس کا رنگ لگ بھگ کالا ہوتا ہے۔ اس کی ڈالیاں چکنی اور شیشہ کی مانند شفاف ہوتی ہیں۔
ایلوا جڑی بوٹی کے دیگر نام
ایلوا،مصبر(Aloes)گھیکوار
لاطینی میں: Aloe Vera
مصبر کا خاندان:M. O. Liliaceae
ایلوا کے دیگر نام
عربی اور فارسی میں صبر ،مرہٹی میں کالا بول ، گجراتی میں ایلیو، ہنگانی میں گھر ت کماری مصر، ہندی میں ایلو ، سنسکرت میں اے لیکھ ،سندھی میں ایریو ،یونانی میں آلویہ فیقرا اور انگریزی میں ایلوز کہتے ہیں۔

ایلو کی ماہیت
گھیکوار ایک عام پودا ہے جس میں ڈنٹھل اور تنا نہیں ہوتا۔ جڑ کےچاروں طرف چوڑے اور لمبے کنارے کانٹے دار پیدا ہوتے ہیں ۔جن میں گودا بھرا ہوتا ہے۔یہ پتے لگ بھگ ایک فٹ لمبے اور ڈھائی انچ چوڑے ہوتے ہیں ۔ اس کے گودے اور پانی میں سے مصبر کی طرح بو اور ذائقہ مصبر کی طرح کڑوا ہوتا ہے ۔ اس پودے کو پھل نہیں لگتا لیکن ماہ فروری مارچ میں اس کے درمیان میں لمبی سیدھی شاخ نکلتی ہے۔ جس کے اوپر بالی نما گلابی پھول لگتے ہیں۔ اس کی جڑ پھیل کر نئے پودے پیدا کرتی ہے۔ اس میں ہر قسم کا کشتہ بن سکتا ہے۔
ایلوا کے پودے کو ایلوایا ایریا ایلوچائی منن کہا جاتا ہے۔ اس پودا کو عموماً گھروں میں خوبصورتی کے لئے لگایا جاتا ہے۔
مقام پیدائش: پاکستان اور ہندوستان
مصبر یا ایلوا کا ذائقہ


مصبر یا ایلوا کا ذائقہ سخت کڑوا اور جی متلا دینے والا ہوتا ہے۔
مصبر یا ایلوا کامزاج
گرم و خشک بدرجہ دوم
مصبر یا ایلوا کامقدار خوراک
ایک سے دو رتی
مصبر کے فوائد
قبض کشا ہے
دست لاتا ہے
پیٹ کے کیڑوں کو مارتا ہے
زنانہ ایام کھولتا ہے،
ریاح کو تحلیل کرتا ہے،
تیزجلاب ہے
ایلوویرا گھیکوار اہم جسمانی غدود مثلاگلے میں موجود تھائی رائڈ غدہ اوردماغ کی جڑ میں واقع غدہ نخامی(Pituitary Gland) جو جسمانی افزائش اور افعال کیلئے ضروری ہارمون تیار کرتے ہیں ، پر مثبت اثرڈالتا ہے۔علاوہ ازیں خواتین کی بیضہ دانیوں کو بھی فائدہ پہنچاتا ہے۔ اس پودے کے پتے،دودھ اور عرق طب میں استعمال کئے جا تے ہیں۔ گھیگوارسوزش کم کرتا ہے، پٹھےاکڑ جائیں تو انہیں نرم کرتا ہے، خون صاف کرتا ہےاور جگر سے فاسدمادوں کو باہر نکالتا ہے۔ گیکو ارکےنرم دبیزپتوں کو دبا اور نچوڑ جو جیل (Gel) حاصل کیا جا تا ہے اسے جلنے ،آبلہ پڑنے خراش لگنے ،تیز دھوپ سے جلد کے سرخ ہونے اور زخمی ہونے کی صورت میں جلد پر لیپ کی صورت میں لگا یا جا سکتا ہے۔ آشوب چشم کی وجہ سے اگر آنکھیں سرخ ہوں اور دکھ رہی ہوں تو اسں جیل کو آنکھوں کے با ہر پیو ٹے پر ملیں ـ آنکھوں کے اندر ہر گز نہ جانے دیں۔ اگر جلد کشش کھو چکی ہے، بے رونق اور کھر دری نظر آرہی ہے تو گھیکوار کے دودھ سے ان کی تازگی اور شگفتگی بحا ل کی جا سکتی ہے تاہم اس کیلئے تازہ جیل استعمال کرنا ضروری ہے۔ بازار میں پہلے سے تیار شدہ ایلوویرا جیل میں وہ شفائی خوبیاں ہوتیں جو تازہ جیل سے حاصل ہوسکتی ہیں۔ جسم کی اندرونی خرابیوں کو دور کر نے کیلئے ایلویرا کا جوس پئیں اور اس کا جل بیرونی جلد پر لگا ئیں۔ زخم ٹھیک کرنے کیلئے پہلے اسے صابن اور پانی سے صاف کریں پھر ایلویرا کے ایک پتے کو کئی انچ تک لمبا ئی میں کاٹ لیں اس کے بعد اس میں سے جو جیل یا گاڑھا مادہ خارج ہوا سے زخم پر لگا ئیں اور خشک ہو نے کیلئے کئی گھنٹے تک یو نہی چھوڑدیں- اگر اس سے درد ہو تو تھوڑی دیر بعد اسے دھولیں اور پھر تا زہ جیل لگا ئیں۔ ایلوا کے طبی خواص والا تیل آپ گھر پر بھی تیا ر کر سکتے ہیں- اس مقصد کیلئے ایلوا کے پتے کو با ریک کاٹ کر شیشے کے ایک مرتبان میں ڈالیں، پھر ان ٹکڑوں کو کسی بھی نباتاتی تیل میں ڈبو دیں۔ 60 دن تک انہیں اسی طرح پڑا رہنے دیں پھر چھان کر گہرے رنگ کی شیشی میں تیل جمع کر لیں اور اس پر “ایلوا تیل” کا لیبل چپکادیں۔ یہ اس لئے ضروری ہے کہ گھیکوار کی اپنی کوئی بو نہیں ہوتی اور بعد میں اس تیل کو شناخت کرنا مشکل ہوسکتا ہے۔ یہ تیل عرصہ دراز تک قابل استعمال رہ سکتا ہے۔

سیب کے فائدے/ سیب / apple

ایلوا کا تیل چونکہ جراثیم اور پھپھوند کا قلع قمع کر تا ہے اسلئے اسے کیل مہاسوں ، خارش،دنبل ، ایگزیما ،داد،قراع (Candidacies) اور دیگر جلدی امراض میں استعمال کیا جاسکتا ہے۔ اس کے جیل کو مسوڑھوں کی خرابی دور کر نے کیلئےماؤتھ واش کے طورپر بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔ جیل تو محفوظ ہے لیکن پورے پتے سے نکالے گئے عرق کو بطور دوااستعمال کرنے میں احتیاط کی ضرورت ہے کیو نکہ اس میں موجود Anthraquinone کے باعث یہ بہت تیز قسم کی قبض کشا دوا بن سکتی ہے۔ اسے طویل عرصے تک یا دوران حمل استعمال کرنا خطرناک ہوسکتا ہے۔ بعض لوگوں میں ایلوویرا جیل سے جلن اور خارش ہو سکتی ہے۔ اگر ایسا ہو تو اس کا استعمال ترک کر دیں۔ قبض کشادوا کے طور پر کسی طبیب کے مشورے سے استعمال کریں اور مقرر خوراک سے تجاوز نہ کریں۔
امریکی ماہرین کی تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ گھیکوار چہرے کی تازگی اور جلد کی خوبصورتی میں جادوئی کردار ادا کرتا ہے ۔
اس میں زخم بھرنے کی حیرت انگیز صلاحیت موجود ہے ۔ گھیکوار یا ایلو ویرا میں پائے جانے والے اجزا جسم میں کینسر ٹیومر کو بڑھنے سے روکتے ہیں۔ کولیسٹرول نارمل کرتا ہے
ایلوا بنانے کی ترکیب
گھیکوار کے پتوں کے رس سےایلوا بنایا جاتا ہے۔یہ گھیکوار پتوں کے رس کو سکھا لینے سے بنتا ہے جو پیلا پن اور لالی لیے ہوئے کالے رنگ کی چمک دار ڈلیاں ہوتی ہیں۔ پانی میں ڈالنے سے پانی کا رنگ پیلا ہو جاتا ہے۔
گھیکوارکے رس کو پتھر کے برتن میں اکٹھا کر کے سکھالیں، یہی اصلی مصّبرہے۔
ایلوا کے پتوں کا رس اکٹھا کرنے کی ترکیب
ایک مٹی کی ہانڈی کے پیندے میں کچھ سوراخ کر کے اس میں گھیکوار کے پتوں کے ٹکڑے ٹکڑے کرکے چھیل کر بھر دیتے ہیں اور اس ہانڈی کو ایک دوسری چوڑے منہ والی ہانڈی پر رکھ دیتے ہیں۔ تاکہ سورا خوں کے راستے گھیکوار کا رس نکل کر نیچےکی ہانڈی میں گرتا رہے۔ کبھی کبھی اوپر والئ ہانڈی میں لکڑی ڈال کر ہلاکرگھیکوار کے ٹکڑوں کو الٹ پلٹ کر دیتے ہیں تاکہ پتوں کا سارا رس نیچے کی ہنڈی میں گر جائے۔ پھر نیچے کی ہانڈی سے رس نکال کر پتھر کی کونڈی میں رکھ کر سکھا لیتے ہیں۔ پھر بھی ہندوستان میں کاٹھیاواڑ،میسوراور مدارس سے عام مل سکتا ہے۔ علاوہ ازیں مصّبراہےسینیا،جزیرہ سقوطرہ سے بھی آتا ہے۔
ایلوا(مصّبر) صاف کرنے کی ترکیب
ایلوا کو چار گناہ ابلتے ہوئے گرم پانی میں گھول کر کچھ دیر تک رکھا رہنے دیں تاکہ مٹی وغیرہ نیچے بیٹھ جائے پھر اوپر کا پانی نتھار لیں اور آگ پر رکھ کر سکھا لیں۔ یہی اصلی ایلوا(مصّبر)ہے۔
ایلوا(مصّبر)کے فوائد
مصبر سے قبض کا علاج
ایلوا 50 گرام، ہیرا کسیس بڑھیا ہرے رنگ کا 50 گرام۔ دونوں کو مٹی کے ساتھ نئے برتن میں 1 1/4کلو پانی میں ڈال کر بھگو دیں۔گل جانے پر موٹے کپڑے سے چھان لیں اور دھیمی دھیمی آگ پر خشک کریں۔ گاڑھا ہونے پر پانی گھوٹ کر ایک ایک رتی کی گولیاں بنا لیں۔ رات کو سوتے وقت ایک گولی پانی سے نگل لیں۔ یہ گولیاں مروڑ،اینٹھن کچھ نہیں کرتی ہیں۔ صبح ایک یا دودست صاف آ جاتے ہیں۔ ہاضمہ کو تیز کرتی ہے۔
ایلوا سے بندش ایام کا علاج
مصّبر شدھ،ہیراکسیس، مرمکی، ہینگ خالص ہر ایک 20 گرام۔ پانی کے ساتھ نخود کے برابر گولیاں بنا لیں اور وقت ضرورت ایک گولی ہمراہ عرق سونف یا نیم گرم پانی سے دیں۔بندش ایام، بے قاعدگی ایام، کمی خون، درد آیام وامراضِ نسواں کے لئے مفید ہے۔

ایلوا(مصّبر)کی مشہور مرکبات
حب تنکار
مصّبرشدھ 56 گرام، سہاگہ 7گرام، اجوائن خراسانی8 3/4 گرام، مرچ سیاہ 42 گرام، شیرہ گھیکوار( کنوار گندل) میں چنے کے برابر گولیاں بنائیں اور ایک سے دو گولی رات کو سوتے وقت کھانا کھانے کے بعد دونوں وقت پانی سے دیں۔ بھوک لگاتی ہے۔ دائمی قبض کودور کرتی ہے اور پیٹ کو بڑھنے سے روکتی ہے۔
حب تِلی
نوشادر،ہیراکسیس،مصّبرشدھ، زیرہ سیاہ، سہاگہ ہر ایک دس گرام۔ رس گھیکوار میں کھرل کر کے نخود کے برابر گولیاں بنا لیں۔ ایک گولی صبح، ایک گولی دوپہر اور ایک شام پانی کے ساتھ دیں۔ تلی کے بڑھ جانے سے جتنے عوارض پیدا ہو گئے ہوں۔ ان گولیوں کےاستعمال سے دور ہو جاتے ہیں۔
حب سورنجاں
ایلوا(مصّبر)شدھ،چھلکا ہر زرد(پپلی)، سورنجاں میٹھی برابر برابر لے کر پیس لیں اور ہری مکو کے پانی میں گوندھ کر چنے کے برابر گولیاں بنا لیں۔ خوراک 2 سے 4 گولیاں رات کو سوتے وقت پانی کے ساتھ دیں۔ اگراجابت زیادہ ہونے لگے تو گولیوں کی مقدار کم کردیں۔
جوڑوں کے درد اور عرق النسا ءمیں بہت ہی مفید ہے۔ زبردست قبض کشا ہے۔
حب ملین
ایلوا(مصّبر)صاف شدہ،ست ملیٹھی، الائچی خورد، سقمونیا مشوی، مصطگی رومی، گل بنفشہ، سونٹھ ہر ایک 10 گرام۔ سب کو بریک کر کے عرق گلاب کے ساتھ چنے کے برابر گولیاں بنائیں اور سایہ میں خشک کرکے محفوظ رکھیں۔ ایک سے دو گولی رات کو سوتے وقت نیم گرم دودھ سے دیں۔ قبض دور کرنے کے لئے یہ گولیاں مجرب و آزمودہ ہیں۔
حب عصارہ
ایلوا(مصبّر)شدھ،عصارہ ریوند ہر ایک دس دس گرام، مصطگی رومی 5 گرام۔
ان سب کو کوٹ چھان کر دانہ مونگ کے برابر گولیاں بنالیں۔
خوراک:دو گولی سے تین گولی ہمراہ نیم گرم پانی رات کو سوتے وقت دیں۔ دست آور ہے۔ درد سر و قبض کے لئے مفید ہے۔

مصبر کے کیمیاوی اجزاء
تلخ جوہر ایلوان، صبرین، موڈین، ریزن، اڑنے والا تیل ، گیلک ایسڈ پایا جاتا ہے۔

ایلوا مصبر کی مقدار خوراک
ایک سے چار رتی
نوٹ
ایلوز کو ہومیوپیتھی میں اسہال بند کرنے کے لئے پوٹینسی میں استعمال کرتے ہیں اور بواسیر میں جب کہ ٹھنڈے پانی سے بواسیر کے درد کو افاقہ ہو تو ایلوز استعمال کرتے ہیں۔
تاج المفردات
(تحقیقاتِ)
خواص الادویہ
حکیم محمد اعظم سہیل نورکوٹ
سیفی دواخانہ
Call & WhatsApp.03456752811

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *