zakawat e hiss ka ilaj / ذکاوت حس کا علاج / Hyperaesthesia

ذکاوت حس/ Hyperaesthesia / zakawat e hiss
ذکاوت حس مرض میں عضوتناسل میں حساسیت بڑھ جاتی ہے یعنی جماع کی خواہش اور مریض نامکمل ایریکشن یعنی انتشار کی وجہ سے بار بار جماع کےعمل سےگزرنا چاہتا ہے بعض اوقات معمولی کپڑےکی رگڑ سےبھی لذت کو محسوس کرتا ہے ذکاوت حس مرض کو کثرت شہوت(Increased Sexual Desire) یا جنون شہوت(Abnormal Sexual Desire) بھی طبی اصطلاح میں بولتے ہیں
شہوت کسی بھی قسم کی ہو اس پر غلبہ پانے والوں کا مذہب اسلام کے علاوہ دیگر مذاہب نے بھی بےتحاشا ثواب کا اظہار کیا ہے کوئی شخص موقع محل کے ملنے کے باوصف بھی اپنی ذات کو شہوت کے زیر اثر نہ آنے دے اور اللہ کی رضا کی خاطر خود کو قابو میں رکھے تو روز قیامت اللہ عزوجل کے سایہ میں ہوگا بہر صورت انسان اشرف المخلوقات ہے اس کا حیوان بن جانا ارزل ترین درجہ ہے جس سے بچنے کی دعا اللہ تعالیٰ سے کرتا رہنا چاہیے
حشفہ کی ذکاوت حس و سرعت انزال
حشفہ میں حسی اعصاب اختتامی سرے پر واقع ہوتے ہیں جن کی بنا پر بعض لوگوں کا حشفہ بہت حساس ہوتا ہے اور ہلکی سے رگڑ یا پھر کسی نرم چیز کے ٹچ ہونے سے انزال ہو جاتا ہے یاد رکھو یہ مرض کثرت حس سے علیحدہ ہوتا ہے

Premature Ejaculation / surat e anzal treatment / سرعت انزال

سرعت انزال سے بچنے کی قدرتی تدابیر
سب سے پہلے اگر کثرت حس سے سرعت انزال ہو تو سرعت انزال کے مریضوں کو ایک بستر یعنی بیوی کے ساتھ نہ سونا چاہیے بلکہ عارضی طور پر الگ الگ کمرے میں سویا کرے فقیر ایک ماہر جنسیات سے سیکھا تھا کہ بستر پر سونے سے لمس اپنا جادو جگاتا ہے مراکز شہوت میں ہیجان پیدا ہوتا ہے جس کے ردعمل میں پیشاب کی نالی کے پچھلے حصہ میں خون کا ٹھہراؤ یعنی ردی کیفیت پیدا کرتا ہے اور یہی زود حس ہونے کی بنا پر سرعت انزال اور بعض اوقات تو احتلام تک بھی پیدا کر دیتا ہے
سچ تو یہ ہے یہ کفیت امراض کے زمرےمیں نہیں آتی اور علاج میں مریض کی ذاتی کوشش کے بغیر کامیابی حکیم یا ڈاکڑ کے بس میں نہیں ہے اس حیوانی کیفیت کو ختم کرنے کے لیے معالج کا وقتی فیصلہ مریض کی صحت مزاج و سماجی حالات کے مطابق ہی علاج تجویز کرنا درست ہوا کرتا ہے جس سے بچنے کی دعا ہر وقت کرتے رہنا چاہیے
ذکاوت حس کے اسباب
عریاں تصاویر،رسالے وفلمیں،شہوانی خیالات کا غلبہ،تنہائی میں رہنا بالخصوص جنس مخالف کے ساتھ ،زنا کاری یعنی اغلام بازی کا عادی ہونا ، فاحشہ عورتوں سےتعلق یا مصروف جماع ہونا
ذکاوت حس کی علامات
آلہ تناسل کا ذرا سےخیال سے ایستادہ ہونا،مذی یا ودی کا اخراج ہونا وہ بھی جھوٹی خیزش سے ،منی پتلی ہونے سے سرعت انزال و جریان جیسی علامات کا پانا ،پیشاب کی نالی میں سوزش،غرض کہ اس کیفیت کی وجہ سے مریض کئی دوسری امراض میں مبتلا ہو جاتا ہے
نوٹ
معالج یہ باتیں ضرور یاد رکھیں دوران علاج بحالت امتلاءکثرت خون،بدن قوی،رنگت سرخ اور رگیں پر ہوگی اورکثرت مباشرت سےکمزوری نہ ہوگی منی کی کیفیت تیز ہو تو خروج کے وقت احساس دلائے گی، پیشاب جل کر آئے گا منی کا رنگ زردی مائل ہوگا اعضائے رئیسہ کی کمزوری کی صورت میں مکدر ہو جاتے ہیں اور مریض چکر محسوس کرتا ہے

نامردی/ مردانہ طاقت/ مردانہ کمزوری کا علاج /mardana kamzori ka ilaj

ذکاوت حس کا علاج
مریض میں کثرت خون کی حالت میں وقت کےساتھ طبیعت کی اصلاح بذریعہ غذا کرنی چاہیے ترشی کا استعمال کرائیے عناب،انگور و انار ترش کاپانی استعمال کرائے دو بار غسل کرے خواہ سردیاں ہو، روزے رکھوائے سرد ادویہ جو منی کی مقدارکم کریں استعمال کرائیں ان تمام تدابیر سےمرض قابو میں آ جائے تو درست وگرنہ کچھ نسخہ جات کسی اچھےمعالج سے تشخیص کے بعد تجویزکرانا چاہیے
فقیر کا معمول مطب علاج
سفوف مغلظ خاص (حکیم سہیل والا) کا مریضوں کو تجویز کرتا ہو اکثر ہفتہ و عشرہ میں فائدہ ہو جاتا ہے انشاءاللہ اگر مرض میں افاقہ نہ ہو تو اس کو ترک کرنا چاہیے اور بندہ گناہ سے توبہ کریں اور کسی طبیب کی زیر نگرانی یا مشورہ کرکے نسخہ تیار کرے انشاءاللہ شفا ہوگی
ھوالشافی
اجزاء
گل سرخ 10 گرام
صندل سفید 10گرام
گل نیلوفر 10گرام
تخم کاہو 10گرام
خرفہ 10گرام
کشنیز 10گرام
سنبھالو 10گرام
خشخاش 10گرام
گلنار 10 گرام
کافورچائنہ 2گرام
ادویات کا سفوف بنالے
مقدارخوراک
ایک گرام نہارمنہ ہمراہ دودھ گائے صبح وشام
علم الحیات(Physiology)
علم الحیات کےمطابق حیوانی یا انسانی جسم جس عرصہ میں تکمیل پاتا ہے اس کی طبعی عمر پانچ گنا وقت پرمشتمل ہوتی ہے اس حساب سے انسانی جسم پچیس سال میں تکمیل پاتا ہے حکماء متقدمین نےبھی یہی لکھا
کثرت جماع یا کثرت حس اس عمر کوگھٹاتی ہے نبادات و جمادات پربھی یہی اصول لگتا ہے مقصد صرف اتنا ہے کہ مباشرت کی حد اعتدال کو کراس نہ کریں
میرا اس علم الحیات کو بیان کرنے کا مقصد صرف اتنا ہی ہے کہ اسلام کے اصولوں کو اپناؤ اور کافروں کےباطل عقیدہ کی پیروی نہ کرو اور سوال اخلاق کےدائرے میں رہ کر کیا کرو انشاءاللہ رہنمائی کرو گا
جسمانی اور روحانی طور پر صحت مند ہونا اللہ پاک کا عظیم تحفہ ہے تو روحانیت (ذکر اللہ) سے دل خوش اور سرور سے بھرپور ہوتا ہے جبکہ صحت سے جسمانی افعال بآسانی ادا ہوتے ہیں فقیر کی انسانی صحت کو بہتر بنانے کی کوشش کس قدرفائدہ مند ہے اس کے لیے آپ کے مشوروں کا منتظر رہوں گا یعنی آپ آزادنہ طور پر ہماری پرووائیڈ لنکس پر اپنی بہتر رائے کا اظہار کر سکتے ہو اور دوسروں کے ساتھ شئیر بھی کرو تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو فائدہ ہو
رسول اللہ صلی اللہ علیہ و سلم نے فرمایا،
جو کوئی تم میں سے اپنے بھائی کو نفع پہنچا سکتا ھو تو اسے نفع پہنچانا چاہیے (صحیح مسلم
نوٹ
جو مریض دوا تیار نہیں کر سکتا یا  تیار کرنے میں کس قسم کا مشورہ چاہیے تو پوسٹ پر کمنٹ کر کے پوچھ سکتا ہے انشاءاللہ ہم رہنمائی کرے گے
یا تیار شدہ دوا آرڈر کرنے کے لیے فون نمبر اینڈ واٹس ایپ پر رابط کرے 03456752811
حکیم محمد اعظم سہیل

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *